74

لٹکوہ ویلی میں پیڈو /خیبر پختونخواہ حکومت کی طرف سے بننے والے دو پن بجلی گھروں کا افتتاح۔

گبور( نمائندہ ڈیلی چترال) لٹکوہ کے آخری گاؤں ڈنسک گبور اور گبور بخ جو کہ افعان بارڈر پر واقع ہیں میں پیڈو حکومت خیبر پختونخواہ کی مالی معاونت سے کمیونٹی پارٹنر شپ کے اصول کے تحت بننے والے دو پن بجلی گھر وں ڈنسک گبور 30 اور گبور بخ میں 50 کلوواٹ کے پن بجلی گھر شامل ہیں کی باقاعدہ افتتاح کی گئی۔ ان دونوں منصوبوں کی افتتاح کے موقع پر چترال سے پاکستان تحریک انصاف سے تعلق رکھنے والی ایم ۔پی ۔ اے و پارلیمانی سکریڑی برائے سیاحت حکومت خیبر پختونخواہ بی بی فوزیہ مہمان خصوصی تھیں۔ اس موقع پر پاکستان تحریک انصاف کے ضلعی نمائندے رحمت غازی ، عبد الطیف،صفت گل ممبر ان ڈسٹر کٹ اسمبلی چترال ، Consulting Associate Peshawar کا نمائندہ ، AKRSP کے اسٹاف ، بمعہ انجنیئرینگ ٹیم، علاقے کے لوگوں کی کثیر تعداد شامل تھیں۔ اس موقع پر ایم۔ پی ۔ اے محترمہ بی بی فوزیہ نے تختی کی نقاب کشائی کرنے کے بعد فیتہ کاٹ کر منصوبوں کا باقاعدہ افتتاح کیا۔ AKRSP پیڈوپراجیکٹ کے ڈپٹی پراجیکٹ ڈائریکٹر جناب محمد ضیاء اللہ نے منصوبوں کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی۔ انہوں نے اس موقع پر پیڈو، حکومت خیبر پختونخواہ اور مہمانان گرامی کاباوجود برف باری پروگرام میں شمولیت پر شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے اس سلسلے میں پیڈو کے چیف ایگزیکٹیو آفیسر اکبر ایوب کا خصوصی شکریہ ادا کیاکہ انہوں نے ان پراجیکٹس کی کامیابی کے لئے اہم کردار ادا کیا۔ اس موقع پر MPA بی بی فوزیہ نے توانائی کے حوالے سے پا کستان تحریک انصاف کی کوششوں کے حوالے سے شراکاء کو اگاہ کیا اور بتایا کہ خیبر پختونخواہ کے اندر توانائی کے ضروریات اور مواقع کو مد نطر رکھتے ہوئے ان کی حکومت نے صوبے کے 12 جنوبی اضلاع جن میں چترال بھی شامل ہے 356 منی مائیکرو ہائیڈرو پاور تعمیر کررہاہے جن میں 55 بجلی گھر ضلع چترال میں بن رہے ہیں اور یہ دونو ں پراجیکٹس بھی ان منصوبو ں میں شامل ہیں۔ انہوں نے اں دونوں منصوبوں کی بروقت اور معیار کے مطابق تکمیل پر AKRSP کو خراج تحسین پیش کیا ۔

Image may contain: 11 people

پا رٹی کے دوسرے رہنماؤں نے بھی اپنی مختصر خطاب میں اس بات پر زور دیا کہ پاکستان تحریک انصاف نے قلیل مدت کے اندر موجود وسائل کو برو ئے کار لاکر صوبے کے اندر ترقیاتی کاموں کا جال بھچادیا ہے اور عوام سے کئے گئے تبدیلی کے وعدے کوحقیقت کر دکھایا۔ مذکورہ دونوں منصوبوں کے حوالے سے ان کا کہناتھا کہ حکومت خیبر پختونخواہ چترال کے اندر پسماندہ دہہات کو سستے داموں بجلی مہیا کرنے کے لئے ان چھوٹے منصوبوں کے لئے AKRSP چترال کو ٖفنڈز فراہم کیاہے ۔ اور AKRSP کے 34 سالہ خدمات کا اعتراف کرتے ہوئے صوبائی حکومت نے کسی NGO کو اپنے کام میں شامل کیاہے ان منصوبوں کے علاوہ بھی توانائی کے شعبے میں حکومت چترال کے اندر ڑاوی جیسے بڑے منصوبوں پر بھی کام شروغ کیا ہے جو کہ طویل المدت منصوبے ہیں ۔ ان کی تکمیل سے ضلع کے اندر معاشی ترقی آئے گی۔

Image may contain: tree, snow and outdoor
مقامی لوگوں نے منصوبوں کے لئے مالی معاونت پر حکومت خیبر پختونخواہ کا شکریہ ادا کیا اور ان کی بروقت تکمیل پر AKRSP کی کوششوں کی تعریف کی کہ انہوں نے مقامی آبادی کو ساتھ لیکر ان دور افتادہ علا قوں میں توانائی کے اس اہم مسلے کو حل کرنے کے لئے کام کیا۔ آخر میںAKRSP-PEDO پراجیکٹ کے پراجیکٹ ڈائر یکٹر محمد درجات نے منصوبوں کی تکمیل میں مقامی آبادی کے کردار کو سراہا اور دوسرے تمام سٹیک ہولڈرز جن میں پیڈو حکومت خیبر پختونخواہ ۔ Consulting Associates Peshawar، دیہی تنظیمات اور کنٹریکٹرز کا بھی شکریہ ادا کیا اور امید ظاہر کی کہ مقامی آبادی ان منصوبوں کو چلانے اور بحال رکھنے میں بھی اپنا کردار ادا کرے گا

Print Friendly, PDF & Email

اپنا تبصرہ بھیجیں