29

اسسٹنٹ ڈائرکٹر بلدیات چترال کرپشن کا بازار گرم کرکے موجودہ صوبائی حکومت کی تمام تر دعوؤں کی نفی کرنے میں مصروف ہے، آل ویلج ناظمین فورم دروش کے صدر عمران الملک کاپریس کانفرنس

چترال ( نمائندہ ڈیلی چترال) آل ویلج ناظمین فورم دروش کے صدر عمران الملک نے وزیر اعلیٰ خیبر پختونخو ا اور وزیر بلدیات سے مطالبہ کیا ہے کہ برسرعام رشوت طلب کرنے والے اسسٹنٹ ڈائرکٹر بلدیات چترال نورالوہاب اور اسسٹنٹ انجینئر فہیم جلال کے خلاف سخت تادیبی کاروائی عمل میں لائی جائے جوکہ نہایت دیدہ دلیر ی سے ویلج ناظمین سے تین ہزار روپے ماہانہ بھتہ مانگتا ہے اور کرپشن کا بازار گرم کرکے موجودہ صوبائی حکومت کی تمام تر دعوؤں کی نفی کرنے میں مصروف ہے۔ جمعہ کے روزچترال پریس کلب میں فورم کے دیگر عہدیداروں امیر فیاض، وقار احمد، ناصر احمدخان، زمرد شاہ، کفایت اللہ، رحمت خان، بشیر احمد، نورعجب اور دوسروں کی معیت میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ اسسٹنٹ ڈائرکٹر نورالوہاب کو جب دروش کے ناظمین نے بھتہ دینے اوران کے مطالبات کو پورا کرنے سے انکار کیا تو وہ مختلف حیلے بہانوں سے ان کو تنگ کرنے کا سلسلہ جاری رکھا ہو اہے اور دروش کے چارویلج کونسلوں کے ترقیاتی کاموں کے ٹینڈروں کو روکے رکھا ہوا ہے اور ان ویلج کونسلوں کے اکاونٹس کو بھی بلاک کرتا رہتا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ گزشتہ دنوں جب ڈی۔ جی آفس کی ایوالویشن ٹیم کی چترال آمد کے موقع پر انہوں نے ہر ویلج کونسل سے دس ہزار روپے طلب کرتے ہوئے کہاکہ اگر اس ٹیم کو خوش نہ کیا گیا تو وہ ہماری غلطیوں کی نشاندہی کریں گے ۔ ویلج ناظمین نے کہاکہ موجودہ اسسٹنٹ ڈائرکٹر کے سیاہ کرتوت اور عمران خان کے دعوے ایک دوسرے کے متضاد ہیں اور یہ بات قابل تشویش ہے کہ موجود ہ اے۔ ڈی برملاکہتا ہے کہ کرپشن اور کمیشن کے رقم ڈائرکٹر جنرل سے لے کر سیکرٹری بلدیات تک تقسیم ہوتے ہیں اور وزیر اعلیٰ کے ساتھ ان کے ذاتی تعلق ہونے کی وجہ سے ان کا کوئی کچھ نہیں بگاڑ سکتا ۔ انہوں نے کہاکہ اختیارات کو نچلی سطح پر منتقل کرنے اور ویلج لیول پر منتخب نمائندوں کو بااختیار بنانے کی باتیں موجودہ اسسٹنٹ ڈائرکٹر کی موجودگی میں محض دھوکہ اور جھوٹ ہے۔ انہوں نے اسسٹنٹ انجینئر فہیم جلال کا رویہ بھی نہایت متعصبانہ ہے جوکہ ویلج ناظمین کو تنگ کرنے کا کوئی موقع ہاتھ سے جانے نہیں دیتا اور گزشتہ چار مہینوں سے ٹینڈروں کو منسوخ کرکے انہیں تنگ کررہے ہیں۔ انہوں نے اس بات پر بھی شدید مایوسی کا اظہار کیاکہ ڈسٹرکٹ ناظم اور تحصیل ناظم بھی بلدیات کے موجودہ اے ۔ڈی اور انجینئر کے سامنے بے بس ہیں ۔ ناظمین نے حکومت پر واضح کرتے ہوئے کہاکہ اگر ایک ہفتے کے اندر ان دونوں افسران کو چترال بدر نہ کئے گئے تو دروش سے کرپشن کے خلاف تحریک کا آغاز کردیا جائے گا۔ انہوں نے کہاکہ عمران خان کو اسلام آباد میں کرپشن کا واویلا مچانے سے پہلے خود اپنے صوبے میں چترال کے اے۔ ڈی کی خبر لینی چاہئے۔ دروش کے ویلج ناظمین نے آل چترال ویلج ناظمین فورم پر عدم اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ اس کے عہدیدار انتظامیہ کے آلہ کار بن گئے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

اپنا تبصرہ بھیجیں