69

چترال کے انتہائی پسماندہ علاقہ ارکاری میں مویشی خانہ تودے میں دب جانے سے 80مال مویشی ہلاک

چترال ( محکم الدین) چترال کے انتہائی پسماندہ علاقہ ارکاری میں گذشتہ روز برف کے تازہ تودے گرنے سے تین افراد آفس خان ، ظاہر خان اور حکیم خان کے مکانات کو شدید نقصان پہنچا ۔ جبکہ آفس خان کا مویشی خانہ تودے میں دب جانے سے 80مال مویشی ہلاک ہو گئے ۔ اور حکیم خان کی بیوی کو دو گھنٹے بعد تودے کے نیچے سے زخمی حالت میں نکال لیا گیا ۔ ارکاری سے تعلق رکھنے سوشل ورکر ز رحیم خان اور ظاہر خان نے پچپن کلومیٹر پیدل چل کر چترال پہنچنے کے بعد میڈیا کو بتایا ۔ کہ ارکاری انسانی زندگیوں کو شدید خطرات درپیش ہیں ۔ پورے علاقے کے لوگ محصور ہو چکے ہیں ۔ اور آئے روز برف کے تودے گر رہے ہیں ۔ اس لئے پیدل چلنا بھی خطرے سے خالی نہیں ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ ہم علاقے کے لوگوں کی آہ و زاری حکومت اور اپنے نمایندگان تک پہنچانے کیلئے مشکل سے چترال شہر پہنچ چکے ہیں ۔ اس لئے اُن کے علاقے کے لوگوں کو تشویشناک صورت حال سے نکالنے کیلئے فوری اقدامات کئے جائیں ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ علاقے کے ڈسپنسری میں ادویات ناپید ہیں ۔ یہی وجہ ہے ۔ کہ گذشتہ روز مریض جہانزیب کو کندھے پر اٹھا کر چترال ہسپتال لانے کی کو شش کی جارہی تھی کہ میژی گرام کے مقام پر مریض دم توڑ گیا ۔ جبکہ کئی بیماریوں نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا ہے ۔ انہوں نے فوری طور پر ڈاکٹروں کی ٹیم اور ادویات بھیجنے کا مطالبہ کیا ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ علاقے میں خوراک کی بھی شدید قلت ہے ۔ کیونکہ مقامی سیل پوائنٹ میں جو گندم موجود ہے ۔ وہ کئی سال پرانا ہے ۔ جبکہ شالی ، اویر ارکاری اور بیستی کے سیل پوائنٹ ختم کئے جا چکے ہیں ۔ انہوں نے صوبائی حکومت ، ایم این اے ، ایم پی ایز اور ڈسٹرکٹ گورنمنٹ سے فوری طور پر روڈ کی صفائی اور خوراک ، ادویات اور دیگر امداد کا مطالبہ کیا ۔ درین اثنا گرم چسمہ کے عوامی حلقوں نے مطالبہ کیا ہے ۔ کہ روڈ کی صفائی کیلئے بلڈوزر سے کام لیا جائے ۔ اور مزید مشینری استعال کرکے کام میں تیزی پیدا کی جائے ۔ انہوں نے کہا ۔ گرم چشمہ کے لوگوں کو روجی سے سور پُل دروشپ تک پانچ گھنٹے پیدل چلنا پڑ رہا ہے ۔ اور انتہائی پریشانیوں سے دوچار ہیں ۔ انہوں نے ایکسین سی اینڈ ڈبلیو سے وقت کی نزاکت کے پیش نظر مزید مشینری لگانے کا مطالبہ کیا ۔ گذشتہ برفباری کے بعد سی اینڈ ڈبلیو اور ڈسٹرکٹ گورنمنٹ کی کوششوں سے کئی سڑکیں ٹریفک کیلئے بحال کی گئی ہیں ۔ تاہم گذشتہ روز کی برفباری سے مستوج لاسپور روڈ ، زیزدی ، کشم ، مداک روڈ دوبارہ بند ہو گیا ہے ، جبکہ یارخون بروغل روڈ کئی عرصے سے بند ہے ۔

Print Friendly, PDF & Email

اپنا تبصرہ بھیجیں