25

ٹریفک وارڈنز پولیس کی موٹروے پولیس کی طرز پر خصوصی الاونس کی منظوری

وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک نے انسپکٹر جنرل آف پولیس ناصر خان د رانی کی سمری کی روشنی مين ٹریفک وارڈنز پولیس کی موٹروے پولیس کی طرز پر خصوصی الاونس کی فوری منظوری دے دی۔ وزير اعلیٰ پرویز خٹک نے سال 2015ميں پولیس لائنز پشاور ميں ٹریفک وارڈنز پولیس کے افتتاح کے موقع پر ٹریفک وارڈن الاونس کا موٹروے پولیس کی طرز پر کرنے کا اعلان کيا تھا اور اس سلسلے ميں آئی جی پی کو سمری بھي بهجوانے کی ہدايت کی تھی۔انسپکٹر جنرل آف پولیس نے وزير اعلیٰ کی ہدايت کے مطابق 11مارچ 2015کو اس سلسلے ميں ايک سمری بھجوائی۔ بعد ازاں آئی جی پی نے 11فروری 2016کو اس پر عمل درآمد کو يقینی بنانے کے لئے ايک دوسرا مراسلہ ارسال کيا جس ميں 1867ٹریفک وارڈنز کی موٹر وے پولیس کی طرز پر الانسز بڑھانے کی ساری تفصیلات درج تھيں۔8فروری 2017کو ايک بار پھر آئی جی پی نے صوبے کے چیف ايگزيکٹيو کو خط ارسال کيا جس ميں پولیس کے اس ديرینہ مطالبے کو ايک ہفتے کے اندر اندر پورا کرنے کی درخواست کی تاکہ ٹریفک وارڈن پولیس کی مراعات کو عملی شکل دی جائے اور ٹریفک وارڈنز ے اور دلجمعی کے ساتھ عوام کی خدمت کو آگے بڑھا سکيں۔ بالا آخر وزير اعلیٰ نے ٹریفک وارڈن پولیس کی خصوصی الاونسز موٹر وے پولیس کی طرز پر کرنے کی منظوری دی۔ سمری کے مندرجات کے مطابق جونئير سب وارډنز کو ماہوار مقررہ 5ہزار، آپر سب وآرڈنز کو 7ہزار اور گزٹيڈ آفسروں کو 10ہزار روپے ماہوار ملاکرے گی۔ واضح رہے کہ وزيراعلیٰ نے پچھلے ہفتے خیبر پختونخوا پولیس کانسٹيبلان ، ھيڈ کانسٹيبلان اور اسسٹنٹ سب انسپکٹر ز کی آپ گريڈيشن کے لئے بھی ايک خصوصی کمیٹی تشکیل دی ہے۔ جو اس پر عمل درآمد کے لئے 15دنوں کے اندر اندر اپنی رپورٹ پيش کرے گی۔ 

Print Friendly, PDF & Email

اپنا تبصرہ بھیجیں