39

صوبے میں پولی تھین بیگ پر پابندی کیلئے قانون سازی ہو چکی ہے اور عمل درآمد کیلئے دو مہینے کا ٹائم فریم دیا گیاہےوزیر اعلیٰ

وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا پرویزخٹک نے کہا ہے کہ صوبے میں پولی تھین بیگ پر پابندی کیلئے قانون سازی ہو چکی ہے اور عمل درآمد کیلئے دو مہینے کا ٹائم فریم دیا گیاہے ۔ا نہوں نے خبردار کیا ہے کہ صوبے بھر میں مقامی سطح پر صفائی اورآبنوشی سمیت تمام میونسپل سروسز کو آؤٹ سورس کیا جائے ورنہ ایکشن ہو گا ۔تمام محکمے میونسپل سروسز کیلئے ایک جامع پلان وضع کریں۔ نامکمل پلان کے لئے حکومت وسائل نہیں دے گی۔ باتوں کی بجائے کام اورنتیجہ خیز عمل قابل قبول ہو گا ۔ ہم نے عوام کو سو فیصد نتائج دینے ہیں۔ فنڈز کا ضیاع برداشت ہو گا اور نہ ہی عوام کے اعتماد میں کمی آنے دی جائے گی ۔ پانی کے زنگ آلود پائپ 70 فیصد تک تبدیل کئے جا چکے ہیں جو سو فیصد تک مکمل ہونا چاہئیں۔ ماضی کی لاپرواہیوں کا خمیازہ آج ہمیں اور محکموں کو بھگتنا پڑ رہا ہے۔سرکاری اداروں کی کیپسٹی نہیں رہی ۔ وہ قومی خزانے پر بوجھ بن چکے ہیںImage may contain: 9 people, people sitting, table and indoor۔سیاسی مداخلت نے اداروں میں بگاڑ پیدا کیا ہے ۔کام چورملازمین معاشرے اور سسٹم پر بوجھ ہیں۔ سیاستدانوں نے جان بوجھ کر اپنے مقاصد کیلئے اداروں میں سیاست کی ۔ہم میرٹ ، شفافیت اور اچھی حکمرانی کی بنیاد رکھ چکے ۔ صحت ، تعلیم اور سماجی خدمات کے دوسرے شعبوں کو فعال کیا ۔ سسٹم کو ٹریک پر لگایا ۔ سٹیٹس کو کی قوتوں کو چاروں شانے چت کیا۔ ریڈ ٹیپ ازم اور کمزور سسٹم سے طاقت حاصل کرنے والوں کی حوصلہ شکنی کی ۔ہم نے عوام پر وسائل خرچ کرنے کا نیا اسلوب متعارف کرایا۔ سیاسی مداخلت کے آگے بند باندھا۔عوام کو بااختیار بنایا۔ انہوں نے میونسپل اور عوامی خدمات کے تمام شعبوں کو آؤٹ سورس کرنے کیلئے اس سال جون کے مہینے تک کی ڈیڈ لائن دیتے ہوئے خبردار کیا کہ اب اس کام میں غلطی کی گنجائش نہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے پشاور کے مقامی ہوٹل میں ڈبلیو ایس ایس پی کے زیر اہتمام میونسپل خدمات کے ایمرجنسی نمبر، شکایات سیل، عملے کے حاضری نظام اورعوامی فیڈ بیک منصوبے کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔تقریب سے صوبائی وزیر بلدیات عنایت اﷲ، پشاور میگا پراجیکٹس کے فوکل پرسن شوکت علی یوسفزئی ،یونیسف کے علاقائی سربراہ کٹکا گیبی، ڈبلیو ایس ایس پی کے بورڈآف ڈائریکٹرز کے چیئرمین خالد مسعود ، چیف ایگزیکٹیو انجینئر خان ز[checklist][/checklist]یب، جنرل منیجر اشرف قادراور زونل منیجر امین گل شنواری نے بھی خطاب کیااور ادارے کے اغراض و مقاصد اور حاصل کردہ کامیابیوں پر روشنی ڈالی ۔ پرویز خٹک نے اس بات پر اطمینان کا اظہار کیا کہ صوبائی حکومت کے ٹھوس اور زمینی حقائق کے مطابق اقدامات کے نتیجے میں ادارے اب زمانے کے ساتھ قدم بہ قدم جارہے ہیں

Print Friendly, PDF & Email