تازہ ترین
Home >> تازہ ترین >> چترال سے اسلام آباد جانے والی پی آئی اے کی فلائٹ پی کے 661کے حادثے میں شہید ہونے والے ڈی سی اُسامہ شہید کی یاد میں تقریب کاانعقاد

چترال سے اسلام آباد جانے والی پی آئی اے کی فلائٹ پی کے 661کے حادثے میں شہید ہونے والے ڈی سی اُسامہ شہید کی یاد میں تقریب کاانعقاد

شہید اُسامہ وڑائچ کیرئر کوچنگ اکیڈمی چترال کی طرف  سے اسلام آبادجانے والی پی آئی اے کی فلائٹ پی کے 661کے حادثے میں شہید ہونے والے ڈی سی اُسامہ شہید کی یاد میں تقریب کاانعقاد کیا گیا ۔تقریب میں ڈی سی چترال خورشید عالم محسود مہمان خصوصی تھے جبکہ گورنمنٹ رلز کالج چترال کے پرنسپل پروفیسر مسرت جبین نے صدارت کی جبکہ سیٹلمنٹ افیسر سید مظہر علی شاہ، پی ٹی آئی کے رہنما سرتاج احمد خان، کوچنگ اکیڈمی کے کوارڈینیٹر فداء الرحمن،تنزیل خان ،جہاز کے حادثے میں شہید ہونے والے سلمان زین العابدین کے چھوٹے بھائی نعمان نے خطاب کیا جبکہ شہید جنید جمشید کی بیوہ اور اسامہ شہید کے والد پروفیسر ڈاکٹر فیض احمد وڑائچ نے ٹیلی فون پر خطاب کرتے ہوئے اپنے جذبات کا اظہار کیا۔ اس موقع پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر خورشید عالم محسود نے کہاکہ دوسروں میں خوشیاں بانٹنے اور دوسروں کے دکھ کو اپنا دکھ سمجھنے والے ہی زندگی میں خوش رہتے ہیں اور یہی دوسرے لوگوں کی نگاہوں کا مرکز ہوکر ان کے دلوں میں اپنے لئے جگہ پاتے ہیں اور شہید اُسامہ احمد وڑائچ نے عملی طور پر یہ سبق ہمیں دے دی ہے ۔ انہوں نے کہاکہسرکاری افسران کے آنے جانے کا سلسلہ جاری رہتا ہے لیکن چترال کے لوگوں میں اُسامہ شہید کے لئے عزت وتکریم دیکھ کر محسوس ہوتا ہے کہ اس نے کس انداز میںیہاں لوگوں کے مسائل کو حل کرنے کی کوشش کی اور ان کی آرام وراحت کے لئے دن رات کام کیااور یہ اعلیٰ مقام انہوں نے لوگوں کی خدمت کے ذریعے حاصل کی۔ انہوں نے کہاکہُ اسامہ شہید کو بہتریں انداز میں خراج تحسین پیش کرنے کی صورت یہ ہے کہ ہم دوسرے لوگوں کے دُکھ کو اپنا دُکھ تصور کرکے ان کے مسائل حل کرنے کوشش کریں۔ دوسرے مقرریں نے اس دلگداز واقعے کی تفصیل بیان کرتے ہوئے اسے چترال کی تاریخ میں ایک ناقابل فراموش واقعہ قراردیا جو کہ ہر سال پوری وادی کو سوگوار کرتی رہے گی۔ اس موقع پر اکیڈمی کی طرف سے زندگی کے مختلف شعبوں میں بہتریں خدمات سرانجام دینے پر مختلف شخصیات کو تعریفی اسناد سے نوازے گئے جن میں پروفیسر اشرف الدین مرحوم،نصرت جبین ، عمران الدین،، صدر چترال پریس کلب ظہیر الدین اور سیف الرحمن عزیز، ڈاکٹر رکن الدین، ڈاکٹر گلزار احمد، ڈاکٹر سمیع اللہ ، پروفیسر مسرت جبین ، پروفیسر شفیق احمد ، کمال الدین، مظفر الدین ، ڈاکٹر رضیہ،،شہزادہ سکندر الملک ، معیز الدین بہرام،اخون قاضی جنید،خالد محمود ودیگر شامل تھے جبکہ ڈی ۔سی وولنٹئر ز ٹاسک فورس کے رضاکاروں کو بھی اسناد دئیے گئے۔ ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر چترال منہاس الدین اورمظہرعلی شاہ بھی ان تقریبات میں موجود رہے۔


error: Content is protected !!