تازہ ترین
بنیادی صفحہ >> تازہ ترین >> مزدوروں کے بچوں کی تعلیم اور خاندان کے علاج معالجے کی مفت سہولیات فراہم کی جائیں /انیس الدین،شبیراحمد

مزدوروں کے بچوں کی تعلیم اور خاندان کے علاج معالجے کی مفت سہولیات فراہم کی جائیں /انیس الدین،شبیراحمد

چترال(ڈیلی چترال نیوز)یکم مئی کو محنت کشوں کا عالمی دن منایا جاتا ہے۔ یہ دن منانے کا مقصد شکاگو کے محنت کشوں کی جدوجہد کو سلام پیش کرنا ہے جنہوں نے آٹھ گھنٹے کے اوقات کار کے لیے نتیجہ خیز جدوجہد کی۔چترال میں پاکستان پیپلزپارٹی ضلع چترال لیبرونگ کے صدرانیس الدین،تجاریونین کے صدرشبیراحمد،پی پی پی علماء ونگ کے صدرممتازعالم دین قاری نظام الدین،ڈرائیوریونین کے صدراقبال حیات،صدرلیبریونین سی اینڈ ڈبلیو،پی پی یوتھ ونگ کے صدرسجاداخون اوردیگرنے عالمی یوم مزدور کے موقع پر خطاب خیبرپختونخوا حکومت سے مطالبہ کرتے ہوئے کہاہے کہ روڈ قلی،روڈگینگ کوبحال کیاجائے غریب مزدورں کے لئے ملازمت کے مواقع مل سکے۔مزدوروں کے بچوں کی تعلیم اور خاندان کے علاج معالجے کی مفت سہولیات فراہم کی جائیں۔ مزدور جو لوگوں کے اعلیٰ شاندار گھر تعمیر کرتے ہیں ان کے لیے بھی نئی لیبر کالونیاں تعمیر کی جائیں۔ جس میں تمام صنعتی کارکنوں کو رہائشی سہولتیں فراہم کی جائیں۔انہوں نے کہاکہ انسانی تاریخ میں محنت و عظمت اور جدوجہد سے بھرپور استعارے کا دن یکم مئی ہے۔1884ء میں شکاگو میں سرمایہ دار طبقہ کے خلاف اْٹھنے والی آواز، اپنا پسینہ بہانے والی طاقت کو خون میں نہلا دیا گیا، مگر ان جاں نثاروں کی قربانیوں نے محنت کشوں کی توانائیوں کو بھرپور کر دیا۔ مزدوروں کا عالمی دن کارخانوں، کھیتوں کھلیانوں،کانوں اور دیگر کار گاہوں میں سرمائے کی بھٹی میں جلنے والے کروڑوں محنت کشوں کا دن ہے اور یہ محنت کش انسانی ترقی اور تمدن کی تاریخی بنیاد ہیں۔ المیہ یہ ہے کہ آج بھی پوری دْنیا میں بالخصوص تیسری دنیا کے ممالک میں محنت کش استحصال کا شکار ہیں۔ پاکستان کی 6 کروڑ سے زائد لیبر فورس میں سے صرف 2.8 فیصد یونین سازی کے حق سے بہرہ مند ہے۔چترال میں یوم مزدور کے حوالے سے ریلی نکالی گئی جس میں مزدووں نے اجرت میں اضافے اور بنیادی حقوق کی فراہمی کا مطالبہ کیا۔

Print Friendly, PDF & Email