اپر چترال میں لینڈ سیٹلمنٹ اپنی مرضی سے کسی کی زمین کسی کے نام پر کی گئی /محمدپرویزلال بونی

اپرچترال(نامہ نگار) پی پی پی اپرچترال کے انفارمیشن سیکرٹری ووی سی ناظم بونی ون محمدپرویزلال نے ایک اخباری بیان میں کہاہے کہ اپر چترال میں لینڈ سیٹلمنٹ کے حوالے سے محکمے نے پچھلے دنوں میں جو سروے کیا ہے، اس کے بارے میں عوام میں شدید تشویش پائی جاتی ہے۔ قانون کے مطابق سروے سے پہلے سروے ٹیم کو گاؤں کے لوگوں سے میٹنگ کرکے انکو بریفنگ دینی ہوتی ہے اور لوگوں کو مطمئن کرنے کے بعد سروے شروع کرنے سے پہلے مالک زمین کو ساتھ لیکر سروے کیا جاتا ہے۔ لیکن پچھلے دنوں میں اپر چترال میں جو سروے ہوا ہے اس سے پہلے نہ مالکان زمین کو ساتھ رکھنے کی زحمت کی گئی اور نہ ہی کوئی میٹنگ ہوئی۔ اپنی مرضی سے کسی کی زمین کسی کے نام پر کی گئی۔ اس کے علاوہ شاملات بشمول چراگاہ اور ریور بیڈ سرکاری تحویل میں لیے گئے ہیں۔اپر چترال کے عوام اس سروے کو مکمل طور پر مسترد کرتے ہیں۔ اس حوالے سے عنقریب تحریک حقوق عوام اپر چترال کے پلیٹ فارم سے ایک زبردست تحریک چلائی جائے گی۔ لہذا تحریک حقوق عوام اپر چترال متعلقہ اداروں اور ارباب اختیار سے گزارش کرتی ہے کہ عوام سے ان کا حق چھیننے کی بجائے عوام کو ریلیف دے اور حالیہ سروے کو منسوخ کرکے نئے سرے سے قانون کے مطابق مالکان زمین کی موجودگی میں ان کی زمینات کے حدود کا تعین کیا جائے، بصورت دیگر تحریک حقوق عوام اپر چترال اس حوالے سے زبردست احتجاجی مظاہرہ کرے گی۔

Print Friendly, PDF & Email