36

ٹی ایچ کیو ہسپتال بونی کو تالا لگا کر دھرنا دینگے،حصول بیگم   

بونی: سابق ڈسٹرکٹ کونسلراور معروف سماجی کارکن حصول بیگم نے بار بار درخواست دینے کے باوجود صوبائی حکومت کی طرف سے اپرچترال کی واحد سرکاری ہسپتال میں خالی اسامیوں پر ڈاکٹروں کی تعیناتی میں ناکامی اور دوسرے بنیادی صحت کے وصائل کی عدم فراہمی پر شدید احتجاج کرتے ہوے محکمہ صحت کو ایک ہفتے کی مہلت دے کر مطالبہ کیا ہے کہ 7دنوں کے اندر اندر تمام خالی اسامیوں پر ڈاکڑز تعینات کیا جاے ،بصورت دیگر وہ اپرچترال کی مجبور اور مفلس خواتین کو ساتھ لیکر ہسپتال کو تالہ لگا کرغیر معینہ مدت تک دھرنا دینگے جو کہ صحت  کا انصاف کے نعرہ لگانے والا اس حکومت کے منہ پر تمانچہ ثابت ہوگا،حصول بیگم کے مطابق ٹی ایچ کیو ہسپتال جسکو اب ڈی ایچ کیو ہونا چاہیے میں 12ڈاکٹروں  کی بجاے صرف2 ڈاکٹرز تعینات ہیں،اور اوپی ڈی کے وقت صرف ایک ڈاکٹر روزانہ۳۰۰ سےزائد مریضوں کے معاینے کے لیے موجود ہوتا ہے، جو کہ غریب مریضوں پر تماشہ کرنے کے مترادف ہے،ایم پی اے چترال ہدایت الرحمن گزشتہ ایک سال سے عوام کو ڈاکٹروں کی تعیناتی کے حوالے سے خوشخبری سنا رہے ہیں اب عوام کو ایم پی اے کی اصلیت اور حیسیت کے بارے میں سب معلوم ہو گیا ہے،دوسری طرف محکمہ صحت کے زمےداروں کی اہلیت کا یہ عالم ہے کہ کچھ عرصہ پہلے نیے ضلع کے لیے الگ سیٹ اپ بنانے کے لیے عہدیداروں کے چناو کرنے والا محکمہ نے کل دوبارہ 2ضلعوں کے لیے ایک ڈسٹرکٹ  ہیلتھ آفیسر کا تقرر کردیا،جو کہ انکی نااہلی اور غیر سنجیدگی کی واضح ثبوت ہے۔

Print Friendly, PDF & Email