268

چترال کو دوسرے علاقوں کے ساتھ موازنہ ہر گز نہ کیا جائے جہاں معاشی سرگرمیوں اور روزگار کے ذراءع انتہائی محدود ہیں /سابق ایم پی اے سیدسردارحسین

چترال (ڈیلی چترال نیوز) چترال سے صوبائی اسمبلی کے سابق رکن اور پی پی پی کے سینئر رہنما سید سردار حسین شاہ نے کرونا وائرس سے بچاءو کے سلسلے میں لاک ڈاون کے دوران چترال کے عوام کے لئے خصوصی بنیادوں پر گزارہ الاءونس پیکج کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ چترال کو دوسرے علاقوں کے ساتھ موازنہ ہر گز نہ کیا جائے جہاں معاشی سرگرمیوں اور روزگار کے ذراءع انتہائی محدود ہیں اور یہاں کی کلچر اور روایت کسی کے آگے ہاتھ پھیلانے کی اجازت بھی نہیں دیتی ۔ ایک اخباری بیان میں انہوں نے صوبائی اور مرکزی حکومتوں کی طرف سے 2ہزار اور 3ہزار روپے کے پیکج کو مضحکہ خیز قرار دیتے ہوئے کہا کہ اپنے تنخوا ہ میں تین لاکھ روپے کا اضافہ کرنے والے وزیر اعظم کو سوچنا چاہئے تھا کہ گرانی ومہنگائی کے اس دور میں کوئی اس قلیل رقم پر گزارہ کیسے کرسکتا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ نیا پاکستان بنانے کے نعرے لگانے والوں نے پہلے ہی غریب کی کمر توڑ دی ہے جبکہ طویل دورانیے کی لاک ڈاون سے ان کے گھروں میں فاقوں نے ڈیرا ڈال دی ہے ۔ سید سردارحسین شاہ نے حکومت سے پرزور مطالبہ کیاکہ چترال کی خصوصی حیثیت کو سامنے رکھتے ہوئے غریبوں کو محکمہ خوراک کے گوداموں سے گندم مفت فراہم کرے اور گزارہ الاءونس ہر اس گھرانے میں کم ازکم 20ہزار روپے کے حساب سے دیا جائے جہاں پر کوئی ملازمت پیشہ فرد نہ ہو ۔

Print Friendly, PDF & Email