347

محکمہ زکوۃ ایک مقدس ادارہ سمجھا جاتا تھا لیکن گزشتہ ایک سال سے ایک سیاسی دفتر کے طور استعمال ہو رہا ہے

محکمہ زکوۃ ایک مقدس ادارہ سمجھا جاتا تھا لیکن گزشتہ ایک سال سے زکوۃ کمیٹی کے منتخب چیرمین محمد قاسم کی وجہ ایک سیاسی دفتر کے طور استعمال ہو رہا ہے جو کہ عوام کو اس ادارے کے حوالے سے بہت زیادہ منفی تاثر جارہا ہے ایک اخباری بیان دیتے ہوئے سابق ناظم ویلج کونسل حیات الرحمان سینیر رہنما پاکستان تحریک انصاف نے کہا زکوۃ کمیٹی کا موجودہ چیرمین میرٹ کی دھجیاں اڑا کر اور اصولی طریقہ کار کو توڑ کر راتوں رات مقامی زکوۃ ممبران کی سیلیکشن کی جس کا اسے کوئی حق نہیں ہے۔ زکوۃ ممبران الیکشن کے ذریعہ سے منتخب ہوتے ہیں لیکن چیرمین زکوۃ نے اپنے من پسند لوگوں کو راتوں رات نوٹیفیکشن جاری کی اور ادارے کی ساکھ کو نقصان پہنچایا اوراپنے دفتر کو پارٹی دفتر کے طور پر استعمال کر رہے ہیں ۔ کورونا وائرس کی وبا سے متاثرین کیلیے اپنے ان من پسند لوگوں کے ذریعے لسٹ تیار کیا اور ہزاروں حقدار لوگوں کو نظر انداز کرکے نا صرف اس مقدس ادارے کو نقصان پہنچایا بلکہ پارٹی کے ساکھ کو بھی خراب کیا گیا۔ ان مفادی ٹولوں کی وجہ سے چترال میں پارٹی کمزور ہوتی جا رہی ہے۔ اس موقع پر سابق ناظم حیات الرحمان نے صوبائی زکوۃ کونسل سے پرزور مطالبہ کیا کہ زکوۃ کمیٹی چترال کے چیرمین کے خلاف کاروائی عمل میں لایا جایےاور اس کو اس عہدے سے برطرف کیا جایے۔

Print Friendly, PDF & Email