60

ممبرصو بائی اسمبلی بی بی فوزیہ نے دروش کے پرائیویٹ سکول دی لرنر میں بچوں پر جسمانی تشدد کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے

چترال (ڈیلی چترال نیوز)رکن صوبائی اسمبلی وپارلیمانی سیکرٹری سیاحت بی بی فوزیہ نے گزشتہ روز دروش کے پرائیویٹ سکول دی لرنر میں بچوں پر جسمانی تشدد کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔اُنہوں نے کہا کہ متعلقہ سکول میں بچوں کو بہتر تعلیم کے بجائے مارپیٹ ہو رہی ہے۔اس افسوسناک واقعہ کے متعلق وزیر اعلٰی اور وزیر تعلیم کو بھی آگاہ کیا ہے۔وزیر تعلیم نے فوری ایکشن لیتے ہوئے متعلقہ استاد کے خلاف انکوائیری کا حکم دے دیا ہے۔اُنہوں نے مطالبہ کیا ہے کہ متعلقہ ٹیچر کو قرار واقعی سزا دی جائے۔بی بی فوزیہ نے ڈسٹرکٹ ایجوکیشن افیسر کو ہدایت کی کہ اُس سکول کےNOCکو ختم کرنے کے لئے بورڈ سے رجوع کیا جائے۔تاکہ آئندہ اس طرح کے ناخوشگوارواقعات پیش نہ آئے ۔ایم پی اے نی بی فوزیہ نے بچوں کے والدین سے بھی درخواست کی کہ اس کیس کی تحقیقات میں مکمل تعاون کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں