47

وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک نے کہا ہے کہ سی پیک پورے خطے کی ترقی میں کلیدی کردار ادا کرے گا۔

وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک نے کہا ہے کہ سی پیک پورے خطے کی ترقی میں کلیدی کردار ادا کرے گا۔یہ اپنی حیثیت کا منفرد منصوبہ ہے جو پورے خطے کو باہم مربوط کرے گا۔چین اس سلسلے میں بدستور سرمایہ کاری کررہا ہے باقی اسلامی برادر ممالک کو بھی آگے آنا چاہیئے اور اس خطے کی اہمیت کے تناظر میں سرمایہ کاری کرنی چاہیئے ۔وزیراعلیٰ نے کہاکہ ہم سرمایہ کاری کے مواقع پیش کرچکے ہیں اور فیزبیلٹی تیار کرلی ہے۔صوبے کے مستقبل کا تعین کرلیا ہے جس سے نہ صرف پاکستان بلکہ پڑوسی ممالک کے عوام بھی مستفید ہوں گے ۔ہم تربیت یافتہ فورس تیار کر رہے ہیں متحدہ عرب امارات کو جس قسم کی بھی افراد ی قوت درکار ہو گی فراہم کریں گے ۔ہم اپنے اسلامی ممالک کے ساتھ دوستانہ تعلقات اور تجارتی سرگرمیوں کو مضبوط کرنا چاہتے ہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے متحدہ عرب امارات کے سفیر سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔وزیراعلیٰ نے کہاکہ ہم سی پیک کے تناظر میں سرمایہ کاری کیلئے مختلف شعبہ جات میں انتظامات مکمل کر چکے ہیں۔ہمارے صوبے میں توانائی ، سیاحت ، صحت ، تعلیم ، زراعت اور دیگر شعبوں میں سرمایہ کاری کے وسیع مواقع موجود ہیں۔ہم نے سرمایہ کاروں کیلئے کاروبار دوست ماحول بنایا ہے ۔حالات سازگار ہیں یہی وجہ ہے کہ اب مقامی سرمایہ کاروں کے علاوہ بین الاقوامی سرمایہ کار بھی یہاں کا رخ کررہے ہیں۔نئے منصوبے سامنے آرہے ہیں اور لوگ یہاں سرمایہ لگانے میں گہر ی دلچسپی لے رہے ہیں۔وزیراعلیٰ نے کہاکہ ہم نے حکمرانی کا ایک شفاف نظام قائم کیا ہے۔سرمایہ کاروں کو بہترین مراعات دے رہے ہیں۔صوبائی صنعتی پالیسی کے ذریعے پرکشش مراعات دینے کے علاوہ ون ونڈ آپریشن کی سہولت دی جارہی ہے۔اس مقصد کیلئے ایک آزاد اور با اختیار کمپنی اکنامک زون ڈویلپمنٹ اینڈ مینجمنٹ کمپنی بنا دی گئی ہے۔ہم نے صوبے میں سرمایہ کاری کیلئے این او سی کی شرط ختم کر دی ہے۔بیرونی سرمایہ کاروں کو بہترین سیکورٹی وغیرہ کے لئے اقدامات کئے ہیں۔اس خطے کے مستقبل کو مدنظر رکھتے ہوئے جدید خطو ط پر منصوبہ بندی کر چکے ہیں۔مستقبل میں یہ خطہ تجارتی اور معاشی سرگرمیوں کا مرکز ثابت ہو گا۔پاک چین اقتصادی راہدری کی وجہ سے اس خطے کی سٹرٹیجک اہمیت پہلے سے زیادہ بڑھ گئی ہے ۔ہم چاہتے ہیں کہ مسلم ممالک کے لوگ بھی آگے آئیں اور یہاں سرمایہ کاری کریں ۔باہمی شراکت پر مبنی سرمایہ کاری کی وجہ سے ہمارے دوستانہ تعلقات کو مزید تقویت ملے گی ۔ایک دوسرے کے مسائل کو سمجھنے اور چیلنجز سے نمٹنے کا موقع ملے گا۔وزیراعلیٰ نے کہاکہ اس خطے کی اہمیت اور ملک کے مستقبل کے بارے میں کبھی سوچا نہیں گیا ۔ہم نے گزشتہ تین سالوں سے اپنے ویژن کے تحت ترقی کے اہداف مقرر کئے اور اُن کے حصول کیلئے دیر پا اقدامات کر رہے ہیں۔ہم قوم کے مستقبل کو مدنظر رکھ کر طویل المدتی منصوبہ بندی کرچکے ہیں جس سے نہ صرف پاکستان کو ایک مضبوط بنیاد میسر ہو گی بلکہ دوست ممالک بھی استفادہ کر سکیں گے۔صوبے میں صنعتکار ی کے فروغ کیلئے شفاف طریقہ کار وضع کیا گیا ہے۔متحدہ عرب امارات کے سفیر نے صوبے کے سیاحت ، صنعت اور توانائی سمیت دیگر شعبوں میں سرمایہ کاری کیلئے وزیراعلیٰ کی پیش کش کو اپنے ملک کے سرمایہ کاروں کے سامنے رکھوں گا۔انہوں نے کہاکہ ہمارے 50 سال پر مبنی پرانے تعلقات ہیں۔ہم اسلامی برادرز ملک ہیں۔ہمارے عوام کا ایک دوسرے کے ساتھ گہرا لگاؤ ہے۔ہم ان تعلقات کو نیا رخ دینا چاہتے ہیں۔ سفیر نے کہا کہ شیخ زید کو پاکستان سے خاص محبت تھی ۔ شیخ زید اسلامک سنٹر اسلامی کلچر کے فروغ میں مصروف ہے اور اچھاکردار ادا کر رہا ہے۔انہوں نے اپنے پشاور کے دورہ کو انتہائی مفید قرار دیتے ہوئے کہاکہ وہ صوبائی حکومت کے ساتھ مل کر اس خطے کی ترقی میں کردار ادا کریں گے ۔

Print Friendly, PDF & Email

اپنا تبصرہ بھیجیں