Breaking News

الیکشن ٹریبونل نے پاکستان تحریک انصاف کے اقلیتی امیداوار برائے مخصو ص نشست ضلع کونسل چترال نابیگ ایڈوکیٹ کے موقف کو تسلیم کرتے ہوئے اُس کے حق میں فیصلہ دے دیا

چترال ( نمایندہ ڈیلی چترال) الیکشن ٹریبونل نے پاکستان تحریک انصاف کے اقلیتی امیداوار برائے مخصو ص نشست ضلع کونسل چترال نابیگ ایڈوکیٹ کے موقف کو تسلیم کرتے ہوئے اُس کے حق میں فیصلہ دے دیا ہے ۔ جس کے بعد وہ قانونی طور پر ضلع کونسل چترال کے اقلیتی رکن قرار پائے ہیں ۔ ایکسپریس سے بات چیت کرتے ہوئے نابیگ ایڈوکیٹ نے کہا ۔ کہ الیکشن کے وقت جے یو آئی کے امیدوار نے اپنے کاغذات نامزدگی داخل نہیں کیا تھا ۔ جس کے سبب تیسری اکثریتی پارٹی کے طور پر اقلیتی نشست پاکستان تحریک انصاف کے حصے میں آیا تھا ۔ جس کا میں امیدوار تھا ۔ لیکن بعد میں صوبائی حکومت کی طرف سے نئی نامزدگیاں کرکے غیر قانونی طور پر پی ٹی آئی کی نشست پر قبضہ جمایاگیا ۔ جس کو میں نے الیکشن ٹریبونل میں چیلنج کیا تھا ۔ گذشتہ روز الیکشن ٹریبونل نے میرا موقف سننے کے بعد فیصلہ میرے حق میں دے دیا ہے ۔ جس کے بعد میں قانونی طور پر کالاش اقلیت کی طرف سے ڈسٹرکٹ کونسل چترال کا رکن منتخب ہوا ہو ں ۔ انہوں نے مزید تفصیلات بتاتے ہوئے کہا ۔ کہ جے یو آئی نے حالیہ الیکشن میں ایک شخص نور شاہدین کو اقلیتی نشست کیلئے ٹکٹ دیا تھا ۔ لیکن وہ شخص بعد میں آل پاکستان مسلم لیگ کے ٹکٹ پر الیکشن لڑا ۔ اور جے یو آئی کا ٹکٹ واپس نہیں کیا ۔ جس کی وجہ جے یو آئی کی نشست ضائع ہو گئی تھی ۔ اور نتیجتا پاکستان تحریک انصاف ضلع کونسل میں تیسر ی بڑی پارٹی ہونے پر یہ سیٹ خود بخود اس کے حصے میں آیا تھا ۔ لیکن بعد آزان صوبائی حکومت کی طرف سے دیے گئے مواقع سے ناجائز فائدہ اُٹھاتے ہوئے نئی نامزدگیاں داخل کرکے یہ سیٹ غیر قانونی طور پر جے یو آئی نے قبضے میں چلا گیا ۔ جس کے خلاف الیکشن ٹریبونل میں رٹ دائر کی گئی تھی ۔ اور گذشتہ روز ٹریبونل نے مقدمے کی سماعت کے بعد فیصلہ میرے حق میں دے دیا ہے ۔ درین اثنا تحریک انصاف نے اقلیتی رکن نابیگ ایڈوکیٹ کی کامیابی پر انتہائی خوشی کا اظہار کیا ہے ۔ اور اسے بہت بڑی فتح قرار دیا ہے ۔ تحریک انصاف کے اقلیتی رکن کی کامیابی کے بعد ضلع کونسل میں پی ٹی آئی کے ارکان کی تعداد آٹھ ہو گئی ہے ۔ ضلع کونسل میں جے یو آئی کے اقلیتی رُکُن تراب خان نے گذشتہ روز حلف اُٹھایا تھا ۔

About ایڈیٹر انچیف

سید نذیر حسین شاہ چترال ایک جانے مانے صحافی ہیں اور گذشتہ کئی سالوں سے مختلف اخباروں اور ٹی وی چینلز کے ساتھ بطور رپورٹر منسلک ہیں انہوں نے ابلاع عامہ میں ڈپلوما حاصل کی ہوئی ہے اور ان کے اخبار ڈیلی چترال کو یہ اعزاز حاصل ہے کہ چترال سے شائع ہونے والا یہ دوسرا اخبار ہے جس کو حکومتی سطح پر سرپرستی حاصل ہے۔

Check Also

گلگت چترال روڑ حکومت پاکستان کی جانب سے گلگت بلتستان بالخصوص ضلع غذر کے عوام کے لئے تحفہ ہے،اگر فنڈز کی فراہمی یقینی ہو تو یہ شاہراہ 18 ماہ تک مکمل ہوسکتی ہے چیف سیکرٹری گلگت بلتستان

غذر (نامہ نگار)چیف سیکرٹری گلگت بلتستان ابرار احمد مرزا نے غذر پریس کلب کے ممبران …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *