45

چترال بازار کے دکانداروں نے ایک مرتبہ پھر تجاوزات کا سلسلہ شروع کردیا ہے ۔ شہید ڈپٹی کمشنر اُسامہ احمد وڑائچ نے دکانداروں کو جن حد بندیوں تک محدود کر دیا تھا

چترال ( محکم الدین ) چترال بازار کے دکانداروں نے ایک مرتبہ پھر تجاوزات کا سلسلہ شروع کردیا ہے ۔ شہید ڈپٹی کمشنر اُسامہ احمد وڑائچ نے دکانداروں کو جن حد بندیوں تک محدود کر دیا تھا ۔ اب اُن کی شہادت سے فائدہ اُٹھا کر اپنے سامان دکانوں کے برآمدوں سے باہر ڈسپلے کرکے راہگیروں کے چلنے کیلئے پھر سے مسائل پیدا کر دیے ہیں ۔ عوامی حلقوں نے دکانداروں کے اس رویے پر انتہائی افسوس کا اظہار کرتے ہوئے اس کی پُر زور مذمت کی ہے ۔ اور ضلعی انتظامیہ سے پُر زور مطالبہ کیا ہے ۔ کہ فوری طور پر اس سلسلے میں کاروائی کی جائے ۔ اور خلاف ورزی کرنے والوں کو کڑی سزا دی جائے ۔ جو حکومت کی تنبیہ کے باوجود تجاوزات کرنے سے باز نہیں آتے ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ بازار کے دکاندار اگر اپنے عمل میں حق بجانب تھے ۔ تو اُنہوں نے سابق ڈپٹی کمشنر کی طرف سے کی جانے والی ظلم و زیادتی کو کیونکر قبول کیا ۔ اور اگر غلط تھے ۔ تو دوبارہ تجاوزات کا ارتکاب کیوں کر رہے ہیں ۔ عوامی حلقوں نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے نو تقر ر شدہ ڈپٹی کمشنر چترال محمد شہاب یوسفزئی سے بھی اس سلسلے میں بلا کسی رو رعایت کے اقدامات اُٹھانے کا مطالبہ کیا ہے ۔ اور اپنی طرف سے بھر پور تعاون کا یقین دلایا ہے ۔ انہوں نے کہا، کہ بازار میں با اُصول دکانداروں کی بھی کمی نہیں ۔ جنہوں نے سرکاری آفیسران کے احکامات کا پاس رکھتے ہوئے تجاوزات سے احتراض کیا ۔ اور اپنے عمل پر قائم ہیں ۔ لیکن موقع شناس دکاندار جو اپنی عادت کے ہاتھوں مجبور ہیں ۔ دوبارہ تجاوزات کا سلسلہ شروع کیا ہے ۔ ان افراد کو اگر بروقت نہ روکا گیا ۔ توشہید ڈپٹی کمشنر کا مشن نامکمل رہے گا ۔ اورعوام بازار چترال میں آمدورفت سے متعلق پھر مشکلات کا شکار ہوں گے ۔

Print Friendly, PDF & Email

اپنا تبصرہ بھیجیں