30

مقامی حکومتوں کو کامیاب بنانے اور انکے مالی و انتظامی تنازعات کے حل کے ضمن میں کلیدی کردار ادا کرینگے۔عنایت اللہ

پشاور(نمائندہ ڈیلی چترال)خیبر پختونخوا کے سینئر وزیر اور جماعت اسلامی کے پارلیمانی لیڈر عنایت اللہ خان نے صوبے کے تمام مقامی کونسلوں اور ناظمین کو یقین دلایا ہے کہ انہیں ہر صورت دفاتر ضرور مہیا کئے جائیں گے تاکہ وہ عوامی مسائل خوش اسلوبی سے حل کرنے کے قابل بن سکیں تاہم جن ضلعی، تحصیل یا ویلج و نیبرہوڈ کونسلوں کو بوجوہ فوری دفاتر نہ مل سکیں وہ تھوڑا صبر سے کام لیں جس کا ثمر انہیں زیادہ اچھا ملے گا اور مناسب منصوبہ بندی اور فنڈز دستیابی کے سبب زیادہ بہتر و کشادہ دفاتر انہیں مہیا ہو سکیں گے وہ اپنے دفتر پشاور میں جماعت اسلامی کے ضلعی نائب امیر اور ٹاؤن ٹو کونسلر فضل اللہ داؤدزئی کی زیر قیادت پشاور کے مختلف ٹاؤنز کے ناظمین ، نائب ناظمین اور کونسلروں کے مشترکہ وفد سے باتیں کر رہے تھے جبکہ صوبائی وزیر وقاف حبیب الرحمان بھی اس موقع پر موجود تھے وفد نے اپنے بعض مسائل و مطالبات سے سینئر وزیر کو اگاہ کیا جن میں ٹاؤن ٹو کیلئے دفتر کی فراہمی کا مسئلہ سرفہرست تھاتاہم عنایت اللہ کی یقین دہانی پر انہوں نے اطمینان کا اظہار کیا اور مقامی حکومتوں کے مسائل کے حل میں ذاتی دلچسپی لینے پر ان کا شکریہ ادا کیا درایں اثناء بلدیات سیکرٹریٹ پشاور کے کانفرنس روم میں خیبر پختونخوا لوکل گونمنٹ کمیشن کے باضابطہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے سینئر وزیر نے واضح کیا کہ لوکل گونمنٹ کمیشن مقامی حکومتوں کے نظام میں فنانس کمیشن کے بعد دوسرا اہم ترین ادارہ ہے اور ہماری کوشش ہو گی کہ اسکے ذریعے چیک اینڈ بیلنس اور نظام کی شفاف نگرانی کے ساتھ ساتھ بلدیاتی اداروں کو زیادہ سے زیادہ آسانیاں اور فوائد بھی مہیا کئے جائیں انہوں نے کمیشن کے نومنتخب ارکان کو مبارکباد دیتے ہوئے امید ظاہر کی کہ وہ مقامی حکومتوں کو کامیاب بنانے اور انکے مالی و انتظامی تنازعات کے حل کے ضمن میں کلیدی کردار ادا کرینگے اجلاس میں کمیشن کے نامزد ارکان سردار محمد ادریس، محمود احمد خان بیٹنی، ڈاکٹر محمد اقبال خلیل، شمائلہ تبسم، سیکرٹری بلدیات سید جمال الدین شاہ، سیکرٹری قانون محمد عارفین، ڈائریکٹرجنرل بلدیات عادل صدیق، ڈپٹی ڈائریکٹر سید خالد اسرار شاہ اور دیگر متعلقہ حکام نے شرکت کی اس موقع پر بلدیاتی اداروں سے متعلق درپیش مسائل اور چیلنجوں کا تفصیلی جائزہ لیا گیا اور جامع حکمت عملی کے تحت انہیں حل کرنے کیلئے لائحہ عمل طے کیا گیا اسی طرح ضلعی، تحصیل و ٹاؤن اور ویلج و نیبرہوڈ کونسلوں اور ناظمین سے متعلق موصولہ بعض شکایات اور مسائل کو اگلے اجلاس کے ایجنڈے میں شامل کرنے کا فیصلہ بھی کیا گیا سینئر وزیر نے ارکان پر زور دیا کہ وہ اگلے ہفتے کمیشن کے اجلاس میں پوری تیاری کے ساتھ شریک ہوں تاکہ انصاف کے تقاضوں کے مطابق صحیح فیصلے کئے جاسکیں انہوں نے ڈویژنل کمشنروں اور ضلعی انتظامیہ کو بلدیاتی ضروریات، مسائل اور مشکلات سے اگاہ کرنے کیلئے پشاور میں انکے تعارفی اجلاس بلانے کا یقین بھی دلایا۔

Print Friendly, PDF & Email

اپنا تبصرہ بھیجیں