57

چترال میں برف میں پھنسے مسافروں کیلئے امدادی سر گرمیاں جمعہ کے روز بھی جاری رہیں۔

چترال ( محکم الدین ) چترال میں برف میں پھنسے مسافروں کیلئے امدادی سر گرمیاں جمعہ کے روز بھی جاری رہیں ۔ اور این ڈی ایم اے کے فراہم کردہ پاک آرمی کے ہیلی کاپٹر کے ذریعے کئی مقامات تک امدادی اشیاء پہنچائی گئیں ۔ جن میں یارخون ، بروغل ، اویر ارکاری ، بیستی ارکاری وغیرہ شامل ہیں ۔ اسسٹنٹ کمشنر چترال الطاف احمد نے میڈیاکو بتا یا ۔ کہ امدادی اشیاء میں فوڈ پیکجز ، آٹے کے تھیلے ، کمبل گرم کپڑے اور جرابین شامل ہیں ۔ اور یہ اشیاء بروغل اور ارکاری کے لوگوں میں تقسیم کی گئیں ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ ہیلی کاپٹر کے ذریعے 7افراد کو گرم چشمہ سے ریسکیو کیا گیا ۔Image may contain: 2 people, people sittingجن میں بیمار اور محصور لوگ شامل تھے ۔ اسی طرح 4افراد کو بروغل سے چترال پہنچایا گیا ۔ جبکہ چترال میں پھنسے ہوئے 30افراد کو ریسکیو کرکے اسلام آبادImage may contain: 10 people, people sittingپہنچایا گیا ہے ۔ اسسٹنٹ کمشنر نے کہا ۔ کہ ہیلی کاپٹر کے ذریعے امداد کی فراہمی کا سلسلہ تقریبا ختم ہو گیا ہے ۔ اب مزید امداد کی فراہمی کیلئے روڈز کھولنے پر توجہ دی جارہی ہے ۔ درین اثنا برفباری کے ایک ہفتے بعد بھی بالائی علاقوں کا رابطہ چترال شہر سے بحال نہ ہو سکی ہے ۔موڑکہو ایریا میں تریچ ویلی ، نشکوہ ، مداک ، زیزدی ، کُشم ، اویر کے راستے بند ہیں ، لو گ پیدل چلنے پر مجبور ہیں ۔ تورکہو روڈ کی صفائی کا کام استارو پُل میں ڈوزر عبور نہ کر سکنے کی وجہ سے رکا ہوا ہے۔ جس کی وجہ سے وورکوپ ، رائین ، شجولی ، شاگرام ، بوزوند ، کھوت ، ریچ ، زنگ لشٹ ، اجنو کا رابطہ تحصیل ہیڈ کوارٹر بونی اور چترال شہر سے منقطع ہے ۔ اور مقامی لوگوں کوصاف شدہ سڑک تک پہنچنے کیلئے 35سے40کلومیٹر تک پیدل چلنا پڑتا ہے ۔ ریچ کے مقام پر برف کا تودہ بی ایچ یو پر گرنے سے دو کمرے اور چاردیواری منہدم ہو چکے ہیں ۔ وی سی ناظم ریچ افسر ولی نے میڈیا کو بتایا ۔ کہ 1500گھرانے انتہائی تشویشناک غذائی قلت سے دوچار ہیں ، اس لئے امداد فراہم کی جائے Image may contain: one or more people and outdoor۔ گرم چشمہ روڈ پر شغور سے آگے پندرہ مقامات پر برف کے تودے گرے ہیں ۔ اور روجی سے موغ تک کا ایریا سب سے زیادہ برف کے تودوں کی زد میں آچکا ہے ۔ اور چترال شہر سے سوائے پیدل چلنے کے زمینی رابطہ منقطع ہے ۔ گرم چشمہ بازار کے تین کلومیٹر ائریا میں سی اینڈ ڈبلیو کی طرف سے روڈ کی صفائی کی گئی ہے ۔ جبکہ اس کے علاوہ تمام سڑکیں مکمل طور پر بلاک ہیں ۔ سڑکوں کی بندش کی وجہ سے گرم چشمہ ، تور کہو ، موڑ کہو کے علاقوں میں تازہ سبزیات ، مرغی نا پید ہو چکے ہیں ،جبکہ اشیاء خوردونوش اور سوختنی لکڑی کی بھی قلت کا سامنا ہے ۔ مستوج ایریامیں یارخون ، بروغل اور لاسپور کے دیہات کا رابطہ مستوج خاص سے منقطع ہے ۔اور ٹریفک کی عدم بحالی کے سبب لوگ ان گنت مسائل سے دوچار ہیں ۔

Print Friendly, PDF & Email

اپنا تبصرہ بھیجیں