112

خاتون کوہ پیماء ثمینہ بیگ نے سپیشل کمیونیکیشنز آرگنائزیشن کے تعاون سے دنیا کی دوسری بلند ترین چوٹی کے ٹو سر کرنے کے لیے جھولہ کیمپ کے مقام سے باقاعدہ طور پر اپنے سفر کا آغاز کردیا

عالمی شہرت یافتہ خاتون کوہ پیماء ثمینہ بیگ نے سپیشل کمیونیکیشنز آرگنائزیشن کے تعاون سے دنیا کی دوسری بلند ترین چوٹی کے ٹو سر کرنے کے لیے جھولہ کیمپ کے مقام سے باقاعدہ طور پر اپنے سفر کا آغاز کردیا۔جہاں سے چھ دن کی پیدل مسافت طے کر کے ایس سی او کے ٹو ڈریم ایکسپڈیشن ٹیم کے ٹو بیس کیمپ پہنچیں گی۔برانڈ ایمبسڈر سپیشل کمیونیکیشنز آرگنائزیشن  (SCO) ثمینہ بیگ کی قیادت میں چھ رکنی پاکستانی کوہ پیماء ٹیم دنیا کی دوسری بلند ترین چوٹی کے ٹو سر کرنے کی کرنے کی کوشش کرے گی۔ اس مہم کو کے ٹو ڈریم ایکسپڈیشن کا نام دیا گیا ہے۔یہ پہلا موقع ہے کہ 8611 میٹر بلند پہاڑ کی چوٹی کو سر کرنے کے لیے صرف پاکستانی کوہ پیماؤں پر مشتمل ٹیم جا رہی ہے۔پاکستان سے کوہ پیما عام طور پرگائیڈ یا پورٹر کی حیثیت میں کے ٹو پر جاتے تھے لیکن ٹیلی مواصلاتی ادارے SCO کی سپانسر شپ کی وجہ سے پاکستانی کوہ پیمائوں کو بطور رکن اس مہم پر جانے کا موقع مل پایا ہے۔اس سے قبل ثمینہ بیگ اسکولی کے علاقے میں پہنچی تو ان کا شاندار استقبال کیا گیا اور نیک خواہشات کے ساتھ رخصت کیا گیا۔جھولہ کیمپ پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انھوں نے کہا وہ کے ٹو سر کرنے کے لیے پرعزم اور پرجوش ہیں، میری چھ رکنی ٹیم پوری طرح تیار ہے۔ انشاء اللہ قوم کی دعاوں سے کے ٹو کی بلندی پر سبز ہلالی پرچم لہراؤں گی۔

Print Friendly, PDF & Email

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں