112

دریائے یارخون کی مسلسل کٹائی کی وجہ سے چترال بونی روڈ بمقام شادر ریشن ہر قسم کی نقل و حمل کے لئے منقطع ہوگیا۔

دریائے یارخون کی مسلسل کٹائی کی وجہ سے چترال بونی روڈ بمقام شادر ریشن ہر قسم کی نقل و حمل کے لئے منقطع ہوگیا۔ متاثرہ علاقے کا جائزہ لینے کے لئے ایم،پی،اے جناب ہدایت الرحمان صاحب، کمانڈنٹ چترال سکاؤٹس، جی،ایم NHA, شاہ عدنان اسسٹنٹ کمشنر مستوج، XEN ایریگیشن چترال اور ڈی،ایس،پی ہیڈ کوارٹرموقع پر پہنچ گئے۔ ایم،پی،اے مولانا ہدایت الرحمان صاحب، ڈسٹرکٹ ایڈمنسٹریشن اپر چترال اور NHA حکام کی لینڈاونرز کے ساتھ کامیاب مذاکرات کے بعد متبادل روڈ پر کام کا آغاز کردیا گیا۔ لائن ڈیپارٹمنٹس یعنی ہیلتھ ڈیپارٹمنٹ اپر چترال نے ایمبولینس سروس مہیا کی اور قریبی BHU کو ایمرجنسی ڈیکلر کردیا۔ TMA مستوج نے متاثرین تک پینے کا صاف پانی پہنچایا۔ لوکل پولیس نے سیکورٹی سروس مہیا کی۔ فارسٹ ڈیپارٹمنٹ اور سیٹلمنٹ ڈیپارٹمنٹ نے متبادل روڈ کے Assessment میں معاونت فراہم کی۔ العرض اپر چترال کے تمام لائن ڈیپارٹمنٹس کے حکام نے ڈسٹرکٹ ایڈمنسٹریشن اپر چترال کے ساتھ کندھوں میں کندھے ملاکر اس ایمرجنسی میں خدمات سر انجام دے رہے ہیں۔ ڈسٹرکٹ ایڈمنسٹریشن اپر چترال تمام ڈیپارٹمنٹس کے خدمات کو سراہتا ہے۔ متبادل روڈ کی Assessment جاری ہے اور نقصانات کا تخمینہ لگانے کے بعد لوگوں کو معاوضہ ادا کیا جائے گا۔ ایم،پی،اے صاحب نے بھی متاثرین کے ساتھ ہر قسم کے تعاون کا یقین دلایا۔

Print Friendly, PDF & Email

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں